الور ہجومی تشدد۔ پہلو خان کے بیٹے او رگواہوں پر حملہ

جئے پور۔ راجستھان کے الور ہجومی تشدد کاشکار بنے ہریانہ کے نوح( میوات)کے باشندے پہلو خان کے قتل معاملے کے گواہوں پر فائیرنگ کا واقعہ منظرعام پر آیاہے۔

نامعلوم افراد نے آج مقدمہ کی سماعت کے دن پہلو کے بیٹوں ارشاد‘ عارف ‘ سمیت دیگر دو گواہ عظمت اور رفیق پر اس وقت حملہ کیا جب وہ کار سے اپنے گاؤں جارہے تھے

۔جیسے ہی نیمرانا کراس کیانامعلوم افراد نے ہماری کارکا پیچھا کرنا شروع کردیا۔

اس کے بعد کار کو اوورٹیک کرتے ہوئے کار روکنے کی کوشش کی جب میں نے کار نہیں روکی تو وہ لوگ فائرینگ کرتے ہوئے بہروڑ کی جانب چلے گئے۔

متاثرین کے مطابق کا پر نمبر پلیٹ نہیں تھی۔

واضح رہے کہ اپریل کے مہینے میں نو ح ہریانہ کے رہنے والے پہلو خان جئے پور سے گائے خرید کر لارہے تھے ‘

جب بہروڑ میں مبینہ گاؤ رکشکوں نے انہیں گائے تسکری کے شبہ میں بری طرح زدکوب کیاجس کے دودن بعد اسپتال میں پہلو خان کی موت ہوگئی‘

موت سے پہلے انہوں نے اسپتال میں پولیس افیسر کے سامنے بیان درج کروایا تھا جس میں انہوں نے چھ لوگوں کے نام لیے تھے۔

TOPPOPULARRECENT