تین طلاق بل کی آج راجیہ سبھا میں پیشکشی

طلاق ثلاثہ بل کل آج یعنی پیر کے روزراجیہ سبھا میں پیش کیا جائے گا۔ بی جے پی نے اس کولے کر اپنے ممبران پارلیمنٹ کوراجیہ سبھا میں موجود رہنے کے لئے وہپ جاری کیا ہے۔ راجیہ سبھا میں اس بل کو پاس کراپانا مودی حکومت کے لئے بڑا چیلنج ہوگا، کیونکہ یہاں حکومت کے پاس اکثریت نہیں ہے۔

دراصل کانگریس پارٹی اس بل کی مخالفت کررہی ہے۔ اور کانگریس کی جانب سے وہپ جاری کیا گیا ہے۔ کانگریس جنرل سکریٹری کے سی وینوگوپال نے ہفتہ کوکہا کہ ان کی پارٹی طلاق ثلاثہ بل کواس کےموجودہ فارمیٹ میں راجیہ سبھا میں منظورنہیں ہونے دے گی۔ وینوگوپال نے نامہ نگاروں سے کہا کہ کانگریس دیگر جماعتوں کوساتھ لےکربل کواس کے موجودہ فارمیٹ میں منظورنہیں ہونے دے گی۔ انہوں نے کہا کہ لوک سبھا میں جب یہ بل پیش کیا گیا تھا، تب 10 اپوزیشن جماعتیں اس کے خلاف کھل کرسامنے آئی تھیں۔

تین طلاق کے رواج پرروک لگانے کے مقصد سے لائے گئے تین طلاق بل (2018) بل پرجمعرات کولوک سبھا میں منظورہوگیا۔ اس بل کو لے کرایوان میں طویل بحث ہوئی۔ بل میں ضروری ترامیم کولے کرکانگریس اے آئی اے ڈی ایم کے سمیت کئی جماعتوں نے ایوان سے واک آوٹ کردیا۔ حالانکہ اس کے بعد بھی بل پرووٹنگ کرائی گئی۔ بل کے حق میں 245 اورخلاف میں 11 ووٹ پڑے۔ اب اسے راجیہ سبھا میں منظوری کے لئے پیش کیا جائے گا۔

Leave a Comment