مسلمانوں کو نشانہ بنانے کے لئے گڈگری او رآر ایس ایس نے ملکر مودی کا مرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ شیہلہ رشید کا ٹوئٹ

نئی دہلی۔جواہرلال نہرویونیورسٹی ( جے این یو) طلبہ کے حقوق کی جدوجہد کرنے والی شیہلہ رشید نے ایک متنازع ٹوئٹ کرتے ہوئے مرکزی وزیر نتن گڈگری اور آر ایس ایس پر مودی کو قتل کرنے کا منصوبے تیار کرنے کا مورد الزام ٹہرایاہے تاکہ مسلمانوں اور کمیونسٹوں کو اس کا ذمہ دار ٹہرایا جاسکے۔

شیہلہ رشیدکو مودی اور دائیں بازو گروپس کی سخت مخالفت کرنے والی مانی جاتی ہیں نے ہفتہ کے روز یہ ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ’’ ایسا لگ رہا ہے کہ آر ایس ایس/گڈگری نے مودی کو قتل کرنے کا منصوبہ تیار کیا ہے‘ اور پھر اس کا الزام مسلمانوں/کمیونسٹوں پر عائد کرتے ہوئے مسلمانوں کو نشانہ بناسکے۔ راجیوگاندھی کے انداز میں‘‘

مذکورہ الزامات پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے مرکزی وزیر نے بناء کسی کا نام لئے بغیر کہاکہ ’’ غیر سماجی عناصر‘‘ کے خلاف جو اس طرح کے افسوسناک ٹوئٹ کررہے ہیں پر قانونی کاروائی کی جائے گی۔

گڈگری نے ٹوئٹ میں کہاکہ’’ میں ایسے غیر سماجی عناصر کے خلاف قانونی کاروائی کروں گے جو افسوسناک تبصرے کررہے ہیں‘ اور وزیر اعظم کو درپیش خطرات کے ضمن میں ذاتی طور پر مجھ کو موضوع بحث لارہے ہیں‘‘

اس اپنا ردعمل پیش کرتے ہوئے سابق جے این یو یونین نائب صدر نے کہاکہ ان کا ٹوئٹ طنزیہ پس منظر میں تھا۔ انہو ں نے گڈگری کے ردعمل پر ٹوئٹ کرتے ہوئے کہاکہ’’ دنیا کی سب سے بڑی پارٹی کے لیڈرس طنزیہ ٹوئٹس پر بھی اپنا ردعمل پیش کررہے ہیں ۔

تصور کریں کہ ایک بے قصور طالب علم عمرخالد جے این یو اور ان کے والد پر بھی ٹائمز ناؤ نے بے بنیاد الزامات عائد کئے تھے۔ مسٹر گڈگری کیا راہول شیوانکر کے خلاف بھی کاروائی کریں گے؟‘‘۔

وزیر اعظم نریندر مودی کے ’’ راجیو گاندھی کے انداز‘‘ میں قتل پر مشتمل مبینہ لیٹر جس کو پونے پولیس نے ضبط کیا ہے کہ حوالے سے راشید نے یہ ٹوئٹ کیاتھا۔لیٹر میں کہاگیا ہے کہ ’’ مودی کی زیر قیادت فسطائی دور میں قبائیلیوں کے حقوق کو پامال کردیا جارہا ہے۔

بہار اور مغربی بنگال میں بڑی شکست کے باوجود مودی نے 15ریاستوں میں کامیابی کے ساتھ حکومت کی تشکیل عمل میں لائی ہے‘‘

Leave a Comment