شتروگھن سنہا کی بالآخر کانگریس میں شمولیت ‘ بی جے پی چھوڑنے کا درد ظاہر ہوا‘ اڈوانی کو اپنا گرو مانا ‘ پٹنہ سے مقابلے کے لئے تیار۔ ویڈیو

مشہور فلم اداکار شتروگھن سنہا ہفتے کے روز بی جے پی کو چھوڑ کر کانگریس میں شامل ہوگئے اور پارٹی نے انھیں بہار کی پٹنہ صاحب سیٹ سے اپنا امیدوار بھی اعلان کر دیا ہے ۔

گذشتہ الیکشن میں وہ اسی سیٹ سے بی جے پی کی ٹکٹ پر جیتے تھے ۔مسٹر سنہا نے ہفتے کے روز کانگریس کے ہیڈکوارٹر میں پارٹی کے جنرل سکریٹری کے سی وینوگوپال، پارٹی کے میڈیا سیل کے انچارج رندیپ سنگھ سورجے والا، پارٹی کے بہار کے انچارج شکتی سنگھ گوہل اور بہار کانگریس کے صدر مدن موہن جھا کی موجودگی میں رسمی طور پر کانگریس کی رسمی رکنیت حاصل کر لی۔

اس موقع پر منعقد پریس کانفرنس میں مسٹر سنہا نے وزیراعظم نریندر مودی کا نام لیے بغیر الزام عائد کیا کہ بی جے پی میں صرف ایک شخص کی ‘تاناشاہی’چل رہی ہے جو کسی اور کی بات نہیں سنتے ہیں اس لیے انہوں نے کانگریس میں شامل ہونے کا فیصلہ کیا۔مسٹر سنہا نے کہا کہ بی جے پی میں انہوں نے ناناجی دیشمکھ جیسے قد آور سیاسی رہنما سے سیاست سیکھی ااور اٹل بہاری واجپئی جیسے بڑے رہنما کے ساتھ کام کیا۔

بی جے پی جن لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی، جسونت سنگھ، یشونت سنہا جیسے بڑے رہنماؤں کی قیادت میں آگے بڑھی اور آج انہی سب بڑے رہنماؤں کو غیر فعال ‘مارگ درشک منڈل’ میں ڈال دیا گیا ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ بی جے پی میں انہوں نے پانچ برس کے دوران بڑی تبدیلیاں دیکھی ہیں۔

ایک شخص کی وجہ سے یہ پارٹی جمہوریت سے آمریت میں بدل گئی ہے ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ وہ شخص کسی کی سننے کو تیار نہیں ہے ۔ اسے جو بھی صلاح دی جاتی ہے اسے سننے کے بجائے صلاح دینے والے کو باغی ماننے لگتا ہے ۔کانگریس کے جنرل سکریٹری وینوگوپال نے پارٹی میں مسٹر سنہا کے شامل ہونے کا خیر مقدم کیا اور کہا کہ مسٹر سنہا اب صحیح پارٹی میں آگئے ہیں۔

مسٹر سنہا اچھے رہنما ہیں لیکن اب تک وہ غلط پارٹی میں تھے ۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر سنہا اچھے پارلیمنٹیرین اور سیاست کی بہتر سمجھ رکھنے والے ہیں اور پوراملک انھیں ایک اداکار اور سیاسی رہنما جانتا ہے ۔ ان کی پارٹی میں شامل ہونے سے کانگریس کو بہت فائدہ ہوگا۔

انہوں نے بی جے پی کو غیر جمہوری اور ترقی مخالف پارٹی قرار دیا اور کہا کہ مسٹر سنہا جیسی شخصیت کے لیے بی جے پی ٹھیک نہیں تھی۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر سنہا کا خود کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے پارٹی میں خیر مقدم کیا ہے اور انھیں مکمل یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ پارٹی کے لیے اہم ثابت ہوں گے ۔

مسٹر گوہل نے کہا کہ مسٹر سنہا الیکشن میں کانگریس کے اسٹار تشہیر کار ہوں گے ۔ وہ بہار میں اپنی پارلیمانی حلقے میں مصروف رہنے کے ساتھ ہی ملک کے مختلف حصوں میں جاکر کانگریس کی تشہیر کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ ہفتے کانگریس کے صدر راہل گاندھی بہار میں پارٹی کے لیے تشہیر کریں گے اور مسٹر سنہا کے ساتھ ہی پارٹی تمام رہنما کانگریس کو مضبوط کریں گے ۔

قابل ذکر ہے کہ مسٹر سنہا بی جے پی کی ٹکٹ پر 2014 میں لوک سبھا پہنچے تھے اور وہ کافی وقت سے پارٹی کی اعلیٰ قیادت سے ناراض چل رہے تھے ۔گذشتہ ماہ کانگریس کے صدر راہل گاندھی سے مسٹر سنہا نے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی تھی اور تبھی سے ان کے کانگریس میں شامل ہونے کو تقریباً یقینی سمجھا جا رہا تھا۔ اس کے بعد انہوں نے خود طے کیا تھا کہ وہ ‘نو راتر’ کی شروعات میں 6اپریل کو کانگریس میں شامل ہوں گے ۔

Leave a Comment