سعودی عرب میں خاتون ملازمین کی تعداد میں اضافہ 

ریاض: سعودی عرب میں گذشتہ چند سالوں سے معاشی اصلاحات پروگرام کی وجہ سے جہاں بیرون ممالک کے افراد کو ملازمتوں سے ہاتھ دھونا پڑ رہا ہے وہیں حیران کن طور پر مقامی افراد کی جانب سے ملازمتیں کرنے میں اضافہ ہوا ہے ۔ سعودی حکومت کے اصلاحاتی پروگرام کے تحت ملک بھر میں زیادہ سے زیادہ ملازمتو ں کے مواقع مقامی افراد کودئے جانے کا منصوبہ ہے جس کے تحت اب ریکارڈ ے تعداد میں مقامی نوجوان ملازمتیں کرنے لگے ہیں ۔

سعودی عرب میں گذشتہ دو سال میں جہاں مرد حضرات ملازمین کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے وہیں خواتین کی تعداد میں بھی زبردست اضافہ ہوا ہے ۔ سعودی حکومت کے تازہ اعداد و شمار کے مطابق اس وقت ملک بھر کے ملازموں کی نصف تعداد خواتین پرمبنی ہے ۔

عرب نیوز نے اپنی رپورٹ میں سعودی عرب کے محکمہ شماریات کی رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ گذشتہ ایک سال سے کم عرصہ کے دوران سعودی عرب میں دولاکھ ۶۰؍ ہزار ملازمین کا اضافہ ہوا ہے ۔اعداد و شمار کے مطابق سعودی عرب میں سیلز او راس طرح کی دیگر نوکریو ں میں ۲؍ لاکھ ۶۰؍ ہزار افراد کو ملازمتیں ملیں ۔ جن میں سے ۴۸؍ فیصد ملازمتیں خواتین کو دی گئیں ہیں ۔

Leave a Comment