طیب رجب اردغان نے کہاکہ انتخابات کے بعد شام کامسلئے کریں گے

انقرہ-ترک صدر رجب طیب اردوان نے کہا ہے کہ ملک مقامی حکومتوں کے انتخابات کے بعد شام کا مسئلہ حل کرے گا۔ خبررساں ادارے کے مطابق استنبول میں ایک انتخابی ریلی میں اپنی جماعت آق کے حامیوں سے خطاب کرتے ہوئے ترک صدر رجب طیب اردوان نے کہا کہ ہم پہلا کام یہ کریں گے کہ شام کا مسئلہ میز پر نہیں میدان میں حل ہو۔

واضح رہے کہ ترکی کی مسلح افواج اس سے پہلے شام کے شمالی علاقے میں کرد جنگجوؤں کے خلاف دو مسلح کارروائیاں کرچکی ہے، ترکی نے خبردار کیا ہے کہ اگر اس کی سرحد کے ساتھ خطرات ختم نہیں ہوئے تو وہ ان کے خاتمے کے لیے مزید کارروائیاں کرسکتا ہے۔

ترک صدر کو اس وقت معاشی محاذ پر مختلف چینلجز درپیش ہیں اور ڈالر کے مقابلے میں ترک لیرے کی قدر میں مسلسل کمی واقع ہورہی ہے جس کے نتیجے میں افراط زر کی شرح میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔

ترک صدر اردوان نے انتخابی مہم کے دوران میں لیرہ کی ساکھ برقرار رکھنے کے لیے بعض اہم سنجیدہ اقدامات کیے ہیں، انہوں نے عالمی طاقتوں کو لیرے کی قدر میں کمی کا ذمہ دار قرار دیا ہے۔

معاشی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اگر ترکی میں طویل المیعاد معاشی اقدامات نہیں کیے جاتے تو پھر سرمایہ کاروں کا ترکی میں سرمایہ کاری کے لیے اعتماد بحال نہیں ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT